Plan crash in Karachi Pakistan

کراچی طیارہ حادثہ: مصدقہ ہلاکتوں کی تعداد 66 ہو گئی


کراچی میں جمعہ کی دوپہر پیش آنے والے فضائی حادثے میں محکمۂ صحت کے حکام کی جانب سے اب تک 66 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کر دی گئی ہے تاہم ان میں سے اب تک صرف پانچ افراد کی شناخت ہو پائی ہے۔
اس طیارے پر 99 افراد سوار تھے جن میں سے دو معجزانہ طور پر حادثے میں زندہ بچ گئے ہیں۔
محکمۃ صحت کی ترجمان کے مطابق جناح ہسپتال میں اب تک 41 لاشیں لائی گئی ہیں جبکہ سول ہسپتال کے حکام کے مطابق وہاں 25 لاشیں موجود ہیں۔
جمعے کی شب پریس کانفرنس میں پی آئی اے کے چیئرمین ارشد ملک نے بتایا کہ حادثے میں زمین پر کسی فرد کی ہلاکت کی اطلاع نہیں ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ جائے حادثہ پر جاری امدادی آپریشن مکمل ہونے میں دو سے تین دن کا وقت لگ سکتا ہے

کراچی طیارہ حادثہ: چار رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی گئی

وفاقی حکومت نے کراچی میں پی آئی اے کے مسافر طیارے کو پیش آنے والے حادثے کی تحقیقات کے لیے ایک چار رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔
اس حوالے سے جاری ہونے والے ایک نوٹیفیکیشن کے مطابق تحقیقاتی کمیٹی کی سربراہی’ایئر کرافٹ ایکسیڈنٹ اینڈ انویسٹیگیشن بورڈ‘ کے صدر ایئر کموڈور محمد عثمان غنی کریں گے۔
اس کے دیگر ارکان میں ونگ کمانڈر ملک محمد عمران، گروپ کیپٹن توقیر اور ناصر مجید شامل ہیں۔
تحقیقاتی کمیٹی کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنی تحقیقات مکمل کر کے ’جلد از جلد‘ اپنی رپورٹ جمع کروائے، تاہم کمیٹی کو یہ بھی ہدایت کی گئی ہے کہ ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ ایک ماہ کے اندر اندر پیش کی جائے۔




Post a Comment

0 Comments